Thank You Bajwa

  

 

سپاہ سالار جنرل قمر جاوید باجوہ نے پیر کو خیبر ایجنسی کا دورہ کیا ،پاک افغان سرحد پر اگلے مورچوں پر جوانوں کے ساتھ دن گزارا ۔ آرمی چیف کو فوج کی آپریشنل تیاریوں اور بہتر سیکیورٹی انتظامات پر بریفنگ بھی دی گئی ۔ مادروطن کے دفاع کیلئے پاک فوج کی بیشمار قربانیاں ہیں، قوم مادر وطن کے دفاع اور سلامتی کے لئے ان گنت قربانیوں کی وجہ سے فوج کی حمایت کرتی ہے ، فوج ریاست کی رٹ بڑے پیمانے پر بحال کر چکی ہے۔ آرمی چیف نے اس دورہ کے موقع پر دہشت گردوں کے خاتمے کے لئے جوانوں کے عزم کو سراہا ۔ انکا کہنا تھا کہ پاکستان پائیدار امن اور استحکام کی جانب گامزن ہے۔ قوم مادر وطن کے دفاع کیلئے فوج کے ساتھ کھڑی ہے۔ انہوں نے اس عزم کا دوبارہ اظہار کیا کہ مادر وطن کی سیکیورٹی اور دفاع کیلئے کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کرینگے ۔ حقیقی سالار وہی ہوتا ہے جو اپنی سپاہ کے لیے انکے ساتھ ہر محاذ پر پہنچے انکی حوصلہ افزائی و راہنمائی کرے

سپاہ سالار نے سری لنکا کے سپاہ سالار سے ملاقات کی ، دوطرفہ تعاؤن اور دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ایک دوسرے کا بھرپور تعاؤن کرنے کی بات ہوئی ۔۔ سپاہ سالار جنرل قمر جاوید باجوہ کی ایران کے وزیر خارجہ سے ملاقات ہوئی اور سیکیورٹی صورتحال پر تبادلہ خیال ہوا ۔ سرحدی نظام بہتر بنانے اور تعلقات کو مستحکم کرنے کی بات ہوئی ۔۔ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں مسلسل حمایت کے لیے سری لنکن فوج کے سربراہ ڈی سلوا نے پاکستان آرمی کی کوششوں کو سراہا ۔

C-4y3NpXkAAMbay.jpg۔
سپاہ سالار جنرل قمر جاوید باجوہ کی سربراہی میں ہی دہشت گردی کے خلاف ایک بڑا قدم آپریشن ردالفساد شروع کیا گیا ۔ سپاہ سالار خصوصاََ اس کی نگرانی کر رہے ہیں ۔۔ آپریشن رَدُّالفَسَاد شروع کرنے کا مقصد اب تک کی کامیابیوں کو مستحکم بنانا اور دہشت گردوں کا بلاتفریق خاتمہ ہے۔ نیشنل ایکشن پلان پر مکمل عملدرآمد کیا جائے گا ۔ یہ آپریشن ملک بھر میں جاری ہے ۔ اس آپریشن کا مقصد ملک میں بچےکھچے دہشت گردوں کے خلاف کاروائ عمل میں لائ جارہی ہے ۔۔ آپریشن ردالفساد کی تفصیل میں اپنے گزشتہ مختلف کالم وبلاگ میں ذکر کرچکا ہوں خیر ابھی میں سپاہ سالار کا ذکرکر رہا تھا اسی سلسلہ کو آگے بڑھاتا ہوں میں سپاہ سالار کے بارے میں کیا عرض کروں جن کی بہادری اور پروفیشنل ہونے کی مثال دشمن دیتے ہوں۔

۔
بھارت جاسوس کلبھوشن یادو جس کو بلوچستان سے پکڑا گیا سپاہ سالار جنرل قمر جاوید باجوہ صاحب نے کل اس کے سزائے موت کے فیصلہ پر دستخط کردیئے ۔۔ سپاہ سالار کے اس فیصلے اور بہادری سے بھارت کی نیندیں حرام ہوگئی ہیں کہ ان کے ایک حاضر سروس آفیسر پکڑا گیا اور پاکستان نے اس سے سب سچ اگلوا کر اسے انجام تک پہنچایا ۔۔ یہ کلبھوشن یادو کو سزائے موت نہیں بلکہ فوجی عدالت نے بھارت میں موجود دہشت گرد عناصر کو دی ہے جو دنیا بھر میں دہشت گردی کی وارداتیں کرواتے ہیں ۔۔ بھارت کے حاضر سروس جاسوس کو پاکستانی حدود سے گرفتار کرنا اور قلیل عرصہ میں تفتیش مکمل کرنے کے بعد پھانسی کا حکم صادر کر کے پورے بھارت کی نیند حرام کرنا ایسا کرارا جواب بھارت کو پاک فوج ہی دے سکتی ہے۔ یہ عظیم کارنامہ جنرل قمر باجوہ کے ہاتھوں پھانسی کے حکم نامہ پر دستخط سے ہوا ہے۔ یہ سب آرمی چیف کی بہادری اور اپنے مشن پر مکمل فوکس کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ آخر جنرل صاحب نے ثابت کیا کہ کوئی فرد ملک سے بڑھ کر نہیں ہوسکتا ۔۔

پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں جتنی قربانی دی اسے دنیا میں بہت قدر کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے ۔۔ گذشتہ چند برسوں میں پاکستان نے تمام مشکلات پر قابو پا لیا ہے اور سکیورٹی اور استحکام قائم کرنے میں بہت اہم کردار ادا کیا ہے ۔ پاکستان کی دہشت گردی کے خلاف جنگ میں قربانیاں ناقابل فراموش ہیں ۔ پاکستان کے پاس ایشین ٹائیگر بننے کا سنہری موقع ہے ۔ جنرل راحیل شریف کی قیادت میں پاکستان نے خاطر خواہ کامیابیاں حاصل کی تھیں تو اسی طرح موجودہ سپاہ سالار جنرل قمر جاوید باجوہ بھی دہشت گردی کے خلاف بھرپور عزم و ہمت کے ساتھ کردار ادا کررہے ہیں ۔۔

۔
پاکستان میں امن و امان کی بہتری حکومت اور پاکستان آرمی کی ترجیحات میں ہے اور اس مقصد کے حصول کے لیے آرمی دیگر اداروں کےساتھ مل کر کام کر رہی ہے. مسلح افواج اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کی کوشش ہے کہ محدود وسائل کے باوجود ملک کی اقتصادی ترقی کے لئے ایک مثبت کردار ادا کیا جاۓ.
کچھ عناصر ملک کے روشن مستقبل کی راہ میں رکاوٹیں پیدا کرنے کی کوشش کر رہے ہیں انکے بارے میں بھی سپاہ سالار کا کہنا ہے کہ ان سے آہنی ہاتھوں سے نپٹا جاۓ گا ۔ اور آخری دہشت گرد کے خاتمے تک پاکستان آرمی دہشت گردی کے خلاف اپنی جنگ جاری رکھے گی ۔۔
آرمی چیف حکومت کے سیاسی مسئلوں سے دور رہنا چاہتے ہیں کیونکہ فوج غیر سیاسی ادارہ ہے اور قمر جاوید باجوہ ایسے سپاہ سالار ہیں جو جمہوریت پر یقین رکھتے ہیں ۔۔ حکومت کا کام سیاست کرنا ہے اور فوج کا کام حفاظت اور دفاع کرنا ہے ۔ پانامہ کیس تو عدالت میں حکومت اور کرپشن سے متعلقہ ہے جبکہ ڈان لیکس کا کیس ملک کے سیکیورٹی کی باتیں لیک کرنے پر اور آرمی پاکستان کے سیکیورٹی پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرسکتی اس لیے حکومت کو چاہیے کہ ڈان لیکس کے اصلی مجرموں کو بے نقاب کرکے ان پر باغی ۔ غداری کا کیس چلایا جائے اور انھیں کیفرکردار تک پہنچایا جائے ۔۔ ۔ پاکستان کی طرف میلی آنکھ اٹھا کر دیکھنے کی کسی کو اجازت نہیں ہے دفاع کے لیے تیار ہے ۔۔ جیسی بھی جنگ ہو یا لائن آف کنڑول کی خلاف ورزی ۔۔ پاک فوج بھارت کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر کھڑی ہے ۔۔ سپاہ سالار پاکستان کو پرامن اور ترقی یافتہ دیکھنا چاہتے ہیں جو پاکستان کی ترقی اور امن کی راہ میں رکاوٹ ڈالنے کی کوشش کرے گا اس کے خلاف موثر کاروائی کی جائے گی اور دشمن چاہیے بھارت ہو یا کوئی بھی اس کی سازشوں کو برداشت نہیں کریں گے ۔۔ جنرل قمر جاوید باجوہ ایک عرصے تک کنٹرول لائن کی ذمہ داری سنبھالے رکھی ۔ وہ بھارتی ہتھکنڈوں سے بہتر انداز میں پنٹنا جانتے ہیں ۔۔ جنرل قمر جاوید باجوہ نے بطور بریگیڈئر کمانڈر کانگو میں اقوام متحدہ کے امن مشن کی کمان بھی کی یعنی دوسرے لفظوں میں کہا جائے تو وہ خطے کے حالات پر بھی گہری نظر رکھے ہوئے ہیں اور خطے کے حالات کو پرامن بنانے کا کردار بہتر انداز میں ادا کرسکتے ہیں ۔۔ دہشت گردی کیخلاف آپریشنز کے تجربات نے پاکستان آرمی کو سخت اور طاقت ور بنادیا ہے ۔۔ یہ صلاحیت آپریشنل تیاریوں میں مزید اضافہ کرتی ہے ۔ سپاہ سالار قمر جاوید باجوہ بہادر اور انتہائی پیشہ ورانہ فوج کا سربراہ ہونے پر فخر کرتے ہیں ۔

جنرل قمر جاوید باجوہ کے آرمی چیف بننے کے بعد آزادی کشمیر کیلئے سرگرم کشمیری مسلمانوں میں خوشی کی لہر سے جڑے حقائق اصل کہانی بیان کر رہے ہیں۔ ساٹھ برسوں سے بھارت کی ریاستی دہشت گردی کا شکار رہنے والے مظلوم کشمیری مسلمان جانتے ہیں کہ امور کشمیر اور خصوصی طور پر اس علاقے کی جغرافیائی سرحدوں کے معاملات کا بھرپور ادراک رکھنے والا ایک جری اور پیشہ ور جرنیل اب افواج پاکستان کا قائد ہے ۔ جہاں جنرل باجوہ کی عسکری قیادت پاکستان میں امن کی خواہاں اور مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے فعال قوتوں کیلئے امیدِ نو کا پیغام ہے ، وہاں اس پیشہ ور سپاہی کا قیادت سنبھالنا بھارت کے ایما پر پاکستان میں شرانگیزی اور دہشت گردی پھیلانے والی طاقتوں کیلئے کسی ڈراؤنے خواب کی ہولناک تعبیر جیسا ہے ۔ دوسری بڑی بات یہ ہے کہ جنرل باجوہ کا تعلق پاک فوج کی بلوچ رجمنٹ سے ہے اور بلوچستان کی عوام کا احساس محرومی دور کرنے میں پوری طرح سنجیدہ ہیں۔ جنرل قمر جاوید باجوہ کے منصب سنبھالتے ہی پاکستانی فوج کی پیشہ ورانہ ساکھ کو متنازعہ بنانے والے سرگرم سازشی عناصر کو کیفرکردار تک پہنچانے میں پرعزم ہیں ۔ ۔ ہمارے بہادر سپاہ سالار کو مسلسل مصروفیات سے جو وقت ملتا ہے آپریشنل علاقوں کا دورہ کرتے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ پاکستان پائیدار امن اور استحکام کی جانب گامزن ہے۔ قوم مادر وطن کے دفاع کیلئے فوج کے ساتھ کھڑی ہے۔ آرمی چیف پرعزم ہیں اور انکا کہنا ہے کہ پاک دھرتی کو فسادیوں سے پاک کرتے ہیں دم لیں گے ۔ ہر رنگ اور نسل کے فسادیوں سے اپنے وطن عزیز کو صاف کریں گے۔ ہم مستقل امن کی جانب بڑھ رہے ہیں ۔ بارڈر پر موثر سیکورٹی انتظامات کے باعث دہشت گردوں پر نظر رکھنے میں مدد ملی ہے ۔ ہمیں چاہیے کہ ہم اپنے بہادر سپاہ سالار کے ساتھ مل کر ملک پاکستان کی ترقی اور خوشحالی کے لیے کام کریں ۔۔تاکہ جلد سے جلد پاکستان میں مکمل امن ہو ۔۔ یہ تب ہی ممکن ہے جب ہم فوج کے ساتھ بھرپور تعاؤن کریں اور اس دہشت گردی کے خلاف جنگ پاک فوج کا ساتھ دیں اور دشمن کی چالوں کو ناکام بنائیں ۔۔

 

C-4yOi5XgAAaOWVC-43GgRXoAI3u4p18221578_453852904961749_4007287845351559586_n

Advertisements

About Raja Muneeb

Raja Muneeb ur Rehman Qamar ( Raja Muneeb - راجہ منیب ) born in Rawalpindi ( Punjab - Pakistan ). Born 7 March 1991 (1991-03-07) Rawalpindi, Punjab, Pakistan . Blogger , writer , Columnist and Media Activist & Analyst . https://www.facebook.com/iamRajaMuneeb RajaMuneebBlogger.wordpress.com , Twitter : https://twitter.com/iamRajaMuneeb http://about.me/rajamuneeb dailymotion : http://www.dailymotion.com/rajamuneeb myspace : https://myspace.com/1rajamuneeb google plus : https://plus.google.com/113474032656188645427/posts gulzar tv : http://www.gulzar.tv/about-us.php

Posted on May 4, 2017, in Uncategorized. Bookmark the permalink. Leave a comment.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s

%d bloggers like this: